اشاعتیں

May, 2012 سے پوسٹس دکھائی جا رہی ہیں

عظیم اور اعلی فقط ایک تو ہے

عظيم اور اعلى فقط ايك تو ہے
جہانوں سے بالا فقط ايك تو ہے

ہوا بند كيڑے كو پتھر كے اندر
وہ جس نے ہے پالا فقط ايك تو ہے

وہ جس نے سدا اپنے بندے كے سر سے
ہر آفت كو ٹالا فقط ايك تو ہے

ہمارے دلوں سے سدا دور كر دے
جو كلفت كا جالا فقط ايك تو ہے

خطا كار بندے كى سارى خطائيں
بھلا دينے والا فقط ايك تو ہے

وہ ہے جس كى قدرت كى ہر بات انوكھی
وہ سب سے نرالا فقط ايك تو ہے

مصائب كى دلدل ميں گھرتے ہوؤں كو
وہ جس نے سنبھالا فقط ايك تو ہے

گنہ گار بزمی كے تاريک دل كو
جو بخشے اجالا فقط ايك تو ہے
خالد بزمی