اشاعتیں

October, 2013 سے پوسٹس دکھائی جا رہی ہیں

رب کعبہ ہے اعتماد مرا

رب کعبہ ہے اعتماد مرا 
دینِ مرسلﷺ ہے اعتقاد مرا

نعت بہر ِثواب لکھتا ہوں
فن نہیں ہے رہینِ داد مرا

مدحِ سرورﷺ رہے گی پائندہ 
نام رکھے گا کون یاد مرا 

کیا کروں گا میں لوٹ کر گھر کو 
دل ہے طیبہ میں شاد باد مرا

فیصلہ ہے کلام وسنت پر 
کون ٹھکرائے اجتہاد مرا

مرا خامہ ہے کفر کو شمشیر 
لفظِ توحید ہے جہاد مرا

عشق احمد ﷺ میں مست رہتا ہوں
فقر اس پر ہے مستزاد مرا

جب بھی حمد و ثنا لکھوں راسخ
ٹوٹ جاتا ہے انجماد مرا 
شاعر: راسخ عرفانی  اقتباس از نسیمِ منی