درس قرآن نہ گر ہم نے بھلایا ہوتا

درس قرآن نہ گر ہم نے بھلایا ہوتا 
یہ زمانہ نہ زمانے نے دکھایا ہوتا

دل میں آیات اترتیں تو اجالا ہوتا 
نفرت و بغض کو سینوں میں نہ پالا ہوتا

اپنے ہاتھوں سے نہ یوں خود کو مٹایا ہوتا 
یہ زمانہ نہ زمانے نے دکھایا ہوتا

بن کے دستور حیات آیا جو انساں کے لیے
نسخہ کیمیا ہر درد کے درماں کے لیے 

رب کے احکام سے دامن نہ چرایا ہوتا 
یہ زمانہ نہ زمانے نے دکھایا ہوتا

تھاما قرآں تو کیے قیصر و کسری نابود 
اس سے منہ پھیر کے خطرے میں ہے امت کا وجود

درس قرآن نہ گر ہم نے بھلایا ہوتا 
یہ زمانہ نہ زمانے نے دکھایا ہوتا

تبصرے

مقبول ترین تحریریں

کیا جزاک اللہ خیرا کے جواب میں وایاک کہنا بدعت ہے؟

محبت سب کے لیے نفرت کسی سے نہیں

استقبال رمضان کا روزہ رکھنے کی ممانعت

احسن القصص سے کیا مراد ہے؟ سورۃ یوسف حاصل مطالعہ

جھوٹے لوگوں کی ہر بات مصنوعی ہوتی ہے۔ سورۃ یوسف حاصل مطالعہ

مسجد کے بارے میں غلط خبر دینے پر برطانوی ذرائع ابلاغ کی بدترین سبکی

تمہارے لیے حرام، میرے لیے حلال

اپنی مٹی پہ ہی چلنے کا سلیقہ سیکھو !

حب رسول