قرآں کی تلاوت کا مزا اور ہی کچھ ہے ​

قرآں کی تلاوت کا مزا اور ہی کچھ ہے
کیفیتِ تسلیم و رضا اور ہی کچھ ہے

دنیا میں بظاہر ہیں دئیے کتنے ہی رَوشن
پر رُشدو ہدایت کا دِیا اور ہی کچھ ہے

جسمانی و روحانی مرض اس سے ہیں جاتے
اے صاحبو قرآں کی دوا اور ہی کچھ ہے

کانوں کو بھلا لگتا ہے ہر حُسنِ تکلم
قرآن کو پڑھنے کی ادا اور ہی کچھ ہے

قرآن کی شِیرینی ہے شیرینی حقیقی
شیرینی قرآں کا مزا اور ہی کچھ ہے

قرآن ہے اِک رختِ سفر راہِ وفا کا
سب راہوں میں اِک راہِ وفا اور ہی کچھ ہے

قرآن جہاں بھر کی کتابوں سے جدا ہے
رُتبے میں یہ اِک نورِ خدا اور ہی کچھ ہے
شاعر: نامعلوم


تبصرے

مقبول ترین تحریریں

کیا جزاک اللہ خیرا کے جواب میں وایاک کہنا بدعت ہے؟

محبت سب کے لیے نفرت کسی سے نہیں

استقبال رمضان کا روزہ رکھنے کی ممانعت

احسن القصص سے کیا مراد ہے؟ سورۃ یوسف حاصل مطالعہ

اپنی مٹی پہ ہی چلنے کا سلیقہ سیکھو !

مسجد کے بارے میں غلط خبر دینے پر برطانوی ذرائع ابلاغ کی بدترین سبکی

تمہارے لیے حرام، میرے لیے حلال

درس قرآن نہ گر ہم نے بھلایا ہوتا

جھوٹے لوگوں کی ہر بات مصنوعی ہوتی ہے۔ سورۃ یوسف حاصل مطالعہ

حب رسول