زندہ جاوید ​

زندہ جاوید 
قائد اعظم کی وفات پر
سید ضمیر جعفری 
ہمارے دل میں جب تک شعلہء ایقان زندہ ہے
ہمارا عہد محکم عزم عالی شان زندہ ہے
ہمارا دین زندہ دین پرایمان زندہ ہے
ہماری زندگی آزاد پاکستان زندہ ہے

ہمارا قائداعظم بہر عنوان زندہ ہے

جو منزل اس نے سر کی اور کوئی کر نہیں سکتا
دلوں میں اتنا اطمینان کوئی بھر نہیں سکتا
یہ کیسے مان لوں وہ مر گیا جو مر نہیں سکتا
وہ رُوحِ پاک زندہ وہ عظیم انسان زندہ ہے

ہمارا قائداعظم بہر عنوان زندہ ہے

وہ طوفانوں سے الجھا اور ساحل دے گیا ہم کو
وہ محفل دے گیا ، سامانِ محفل دے گیا ہم کو
خود اپنی آگ میں پگھلا ہوا دل دے گیا ہم کو
یہ جذبِ بیکراں طوفان در طوفان زندہ ہے
ہمارا قائداعظم بہر عنوان زندہ ہے

اجل بس اس کے جسمِ ناتواں کو چھین سکتی ہے
فنا کی موج ، مشتِ استخواں کو چھین سکتی ہے
مگر کب اس کے جذبِ بیکراں کو چھین سکتی ہے
یہ جذبِ بیکراں طوفان در طوفان زندہ ہے

ہمارا قائداعظم بہر عنوان زندہ ہے

تبصرے

مقبول ترین تحریریں

کیا جزاک اللہ خیرا کے جواب میں وایاک کہنا بدعت ہے؟

محبت سب کے لیے نفرت کسی سے نہیں

استقبال رمضان کا روزہ رکھنے کی ممانعت

احسن القصص سے کیا مراد ہے؟ سورۃ یوسف حاصل مطالعہ

جھوٹے لوگوں کی ہر بات مصنوعی ہوتی ہے۔ سورۃ یوسف حاصل مطالعہ

مسجد کے بارے میں غلط خبر دینے پر برطانوی ذرائع ابلاغ کی بدترین سبکی

تمہارے لیے حرام، میرے لیے حلال

اپنی مٹی پہ ہی چلنے کا سلیقہ سیکھو !

درس قرآن نہ گر ہم نے بھلایا ہوتا

حب رسول